265

بعض سوشل میڈیا صارفین کیلئے فوج نے شکنجہ کس لیا

راولپنڈی : پاک فوج نے مسلح افواج کے نام پر چلنے والے 255 جعلی سوشل میڈیا اکئونٹس کے خلاف کارروائی کے لیے فہرستیں فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے حوالے کر دیں۔
ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے ایف آئی اے کو دی گئی فہرست میں 45 ٹوئٹر، 94 فیس بک، 101 یوٹیوب اور 15 انسٹاگرام کے جعلی اکائونٹس کی تفصیلات شامل ہیں۔
نیوز کے مطابق جعلی اکائونٹس براہ راست پاکستان آرمی، پاکستان نیوی اور پاکستان ایئرفورس کا نام استعمال کر رہے ہیں، جن کے ذریعے یہ تاثر دیا گیا کہ ان اکائونٹس میں جو کچھ کہا جا رہا ہے وہ سب فوج کا بیانیہ ہے۔
سوشل میڈیا کے ان جعلی اکائونٹس میں سے کئی ایسے بھی ہیں، جن پر پاک فوج کے حق میں باقاعدہ ٹوئیٹس کی جاتی تھیں، تاہم آئی ایس پی آر نے ان اکائونٹس کے خلاف بھی کارروائی کرکے واضح پیغام دیا ہے کہ فوج ایک منظم ادارہ ہے جہاں قانون کا احترام فرض اول ہے۔
ٹوئٹر اکائونٹس میں سب سے زیادہ فالورز ‘پاکستان آرمی’ نامی اکائونٹ کے ہیں، جن کے 1 لاکھ 21 ہزار فالورز ہیں۔’پاکستان ملٹری’ نامی اکائونٹ کے 84 ہزار فالورز ہیں اور ان سے فوج سے متعلق خبریں ٹوئیٹ کی جاتی تھیں۔’آئی ایس آئی’ نامی اکائونٹ کے 64 ہزار فالورز ہیں، دیگر اکائونٹس ‘پراوڈ خاکی’، ‘گڈ سولجر’، ‘فوجی ٹوئیٹ’، ‘آئی ایس آئی آر ٹی’اور ‘پروٹیکٹرز’ کے نام سے سرگرم عمل تھے۔
فیس بک پر پاکستان کی مسلح افواج کے ناموں سے چلنے والے اکائونٹس کی تعداد 94 ہے۔ ‘پاک آرمی’ کے نام سے اکائونٹ کو فالو کرنے والوں کی تعداد 9 لاکھ 62 ہزار سے زائد ہے۔
اسی طرح پاکستان نیوی، ائیر فورس، آئی ایس آئی، آئی ایس پی آر، ڈی جی آئی ایس پی آر، آئی ایس پی آر آفیشل، پاک نیوی آفیشل، پاک ائیر فورس آفیشل، پی اے ایف گرلز اور ایس ایس جی جیسے ناموں کے ساتھ بنائے گئے اکائونٹس کو فالو کرنے والوں کی تعداد بھی لاکھوں میں ہے جبکہ فیس بک پر 31 اکائونٹس پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے ٹائٹل کے ساتھ ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں