79

کانگریس کے ’کالے جادو‘ سے ہمارے رہنماﺅں کی اموات ہورہی ہیں، بی جے پی رہنما

نئی دلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی رکن اسمبلی پراگیا سنگھ ٹھاکر نے سشما سوراج اور ارون جیٹلے سمیت حال ہی میں طبعی موت مرنے والے بی جے پی کے رہنماﺅں کی اموات کا ذمہ دار کانگریس کو قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان رہنماﺅں پر کانگریس نے کالا جادو کرایا تھا۔
بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق انتہا پسند ہندو جماعت آر ایس ایس سے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شمولیت اختیار کرکے انتخاب جیتنے والی پراگیا سنگھ ٹھاکر اپنے متعصبانہ اور مسلم مخالف بیانات کے لیے شہرت رکھتی ہیں اور گائے کے بول و براز سے کینسر کے علاج کی مضحکہ خیز دعوے بھی کرتی ہیں تاہم اس بار وہ ایک عجیب منطق لائی ہیں۔
مودی کے دوسری بار اقتدار میں آنے کے بعد سے دو سابق وزراءسشما سوراج اور ارون جیٹلے بالترتیب دل کا دورہ پڑنے اور گردوں کی خرابی کے باعث جہان فانی سے کوچ کرگئے اسی طرح بابو لعل سمیت چند ایک مقامی رہنما بھی طبعی موت مرگئے جس پر پراگیا سنگھ نے انکشاف کیا کہ یہ تمام رہنما کالے جادو کے باعث ہلاک ہوئے۔
پراگیا سنگھ ٹھاکر نے اپنے بیان میں کہا کہ کانگریس نے بی جے پی کے ارکان پر کالا جادو کروایا ہے اور انتخابی مہم کے دوران ایک مہاراج نے بھی خبردار کیا تھا کہ کانگریس بی جے پی رہنماﺅں کو مارنے کے لیے ا±ن پر کالا جادو کروا رہی ہے اور اب سشما سوراج، ارون جیٹلے اور بابو لعل کی موت سے یہ بات سچ ثابت ہورہی ہے۔
پراگیا سنگھ ٹھاکر کی اس بات پر تقریب میں شامل رہنما بھی ہکا بکا رہ گئے اور صحافیوں کی جانب سے مضحکہ خیز دعوے سے متعلق سوال پوچھنے پر تقریب میں موجود بی جے پی کے رہنماو¿ں نے کہا کہ اس کی وضاحت پراگیا سنگھ ٹھاکر ہی کر سکتی ہیں۔
واضح رہے کہ رواں مہینے میں بی جے پی کے تین بڑے رہنما اس دنیا سے چل بسے ہیں، سابق وزیر خارجہ سشما سوراج منگل 6 اگست، مدھیہ پردیش کے سابق وزیراعلیٰ بابو لعل گور بدھ 21 اگست اور سابق وزیر خزانہ ارون جیٹلے 24 اگست کو جہان فانی سے کوچ کرگئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں