347

جیا بچن نے میرا نام ’پدماوت‘ کے لیے پیش کیا، ادیتی

بھارتی فلم’ پدما وت‘ کو جتنے لوگوں نے بھی دیکھا ہے ان میں سے 99فیصد لوگوں کی رائے یہ ہے کہ فلم کی ہیروئن ،دپیکا پڈکون کے بجائے ادیتی راﺅ حیدری کو ہونا چائیے تھا کیونکہ وہ اس فلم میں دپیکا سے زیادہ حسین لگی ہیں جبکہ ادیتی راﺅ نے انکشاف کیا ہے کہ فلم کے لیے ان کا نام جیا بچن نے تجویز کیا تھا۔
ادیتی، علاﺅالدین خلجی کی بیوی کے روپ میں ادیتی راﺅ نے فلم کے ا?غاز میں ہی شائقین کے دل اس وقت جیت لیے جب علاﺅالدین کے رشتہ مانگنے پروہ گوری رنگت اور ہونٹوں پر لالی کے ساتھ اپنا ذرا سا چہرہ نکال کر مسکرائیں اور سارا ہال تالیوں سے گونج اٹھا۔
ادیتی راﺅ حیدری نے ہندوستان ٹائمز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ جیا بچن نے میرا نام پیش کیا۔‘
ادیتی نے جیا بچن کے اس فیصلے کا مان رکھتے ہوئے لوگوں کو اپنی اداکاری سے اس قدر متاثر کیا کہ لوگ داد دئیےبغیر رہ نہ سکے۔
پدماوت میں ادیتی راﺅ نے کم مگر بہت ہی میجر رول ادا کیا ہے۔ یوں کہا جائے کہ اگر فلم میں مہرالنسا نہ ہوتیں تو رانی پدماوتی مار دی جاتیں اور صرف وہ ہی نہیں بلکہ راجا رتن سنگھ بھی ختم ہو جاتے تو غلط نہ ہوگا۔
ادیتی راﺅ نے پدماوت میں علاو? الدین خلجی کی بیوی کا فرض بخوبی ادا کیا ورنہ فلم دیکھتے ہوئے ایسا لگ رہا تھا کہ اب انہوں نے علاﺅالدین کے ساتھ غداری کی تو اب کچھ برا کیا۔۔۔ مگر ہمارے سارے اندازے غلط ثابت ہوئے۔ وہ اس حد تک با وفا ثابت ہوئیں کہ نہ صرف ان کےظلم و ستم سہتی رہیں بلکہ آخری وقت تک ان کے ساتھ کھڑی رہیں جبکہ خلجی ایک بہت ہی ظالم اور بے وفا شخص تھاجس نے کبھی مہرالنسا سےنہ تو محبت کی اور نہ ہی اس کی قدر کی۔
ادیتی سے پوچھا گیا کہ جیا بچن نے ان کا نام کیوں تجویزکیا؟ تو اس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ایک مرتبہ جیا جی نےمجھے کہا تھا کہ میری آنکھیں بے حد خوبصورت ہیں جو لوگوں کو بہت متاثر کرتی ہیں۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ ’ادیتی کی آنکھوں میں پاکیزگی اور ان کے چہرے پر نور ہے۔‘ اور تب ہی ادیتی کا نام ’مہرالنسا‘ کے لیے دیا کیونکہ ان پر علاﺅالدین خلجی کی بیوی کا رول بہت سوٹ کرتا ہے۔ ‘
اس میں کوئی شک نہیں کہ جب ادیتی (مہرالنسا) ملکہ ہند کے لباس میں زیب تن، بھاری زیورات پہنے اسکرین پر آئیں تو نظریں ان پر سے ہٹ ہی نہیں پا رہی تھیں اور سب یہی سوچ رہے تھے کہ ’اس کو ’رانی پدماوتی‘ کا رول کیوں نہیں دیا گیا؟؟‘ کیونکہ اصل رانی پدماوتی کے لیے یہ بات کہی جاتی ہے کہ وہ بہت خوبصورت تھیں جو بھی ان کو دیکھتا تھا بس دیکھتا ہی رہ جاتا تھا۔
ادیتی راﺅ حیدری اس سے قبل بھی کئی فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دیکھا چکی ہیں مگر علاﺅ الدین خلجی کی بیوی کا کردار انہوں نے جس شاندارانداز سے نبھایا لوگوں نے نہ صرف ان کی اداکاری کو سراہا بلکہ ان کوبے حد پسند بھی کیا جا رہا ہے۔
جب اس بات کا انکشاف ہوا کہ فلم پدماوت کے لیے ادیتی راﺅ حیدری کا نام ’جیا بچن‘ نے تجویز کیا تھا، تو اک مرتبہ پھراس فلم میں ان کے تمام سین میرے نظروں کے سامنے آگئے اور جیا بچن کے اس فیصلے پر دل نے گواہی دی کہ واقعی انہوں نے صحیح نام پیش کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں