105

امریکی صدارتی امیدوار جوبائیڈن پر جنسی زیادتی کا الزام

واشنگٹن: امریکی سینیٹ کی سابق ملازمہ نے امریکی صدارتی امیدوار اور ڈیموکریٹ رہنما جوبائیڈن پر 90 کی دہائی کے اوائل میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا الزام عائد کیا ہے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی سینیٹ کی سابق ملازمہ ٹیرا رائیڈ نے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ 1993 میں ا±س وقت کے سینیٹر جوبائیڈن نے کیپٹل ہل آفس کی زیر زمین منزل میں زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ ٹیرا رائیڈ نے گزشتہ ہفتے تھانے میں شکایت بھی درج کرائی ہے۔
جوبائیڈن کی انتخابی مہم کے نائب منیجر نے وضاحتی بیان میں خاتون کے الزام کو سفید جھوٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ سابق نائب صدر نے اپنی تمام زندگی خواتین پر مظالم کے خلاف قانون سازی اور کلچر کو تبدیل کرنے کے لیے وقف کی ہے اور خواتین کے حقوق کے سب سے بڑے علمبردار ہیں۔
واضح رہے کہ امریکی صدارتی امیدوار جوبائیڈن پر جنسی الزام اس وقت سامنے آیا ہے جب وہ ڈیموکریٹس کی جانب سے ٹرمپ کے خلاف صدارتی امیدوار کے لیے مضبوط امیدوار بن کر ابھرے ہیں۔ جوبائیڈن بارک اوباما کے دور میں ملک کے ناب صدر بھی تھے۔

واشنگٹن: امریکی سینیٹ کی سابق ملازمہ نے امریکی صدارتی امیدوار اور ڈیموکریٹ رہنما جوبائیڈن پر 90 کی دہائی کے اوائل میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا الزام عائد کیا ہے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی سینیٹ کی سابق ملازمہ ٹیرا رائیڈ نے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ 1993 میں ا±س وقت کے سینیٹر جوبائیڈن نے کیپٹل ہل آفس کی زیر زمین منزل میں زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ ٹیرا رائیڈ نے گزشتہ ہفتے تھانے میں شکایت بھی درج کرائی ہے۔
جوبائیڈن کی انتخابی مہم کے نائب منیجر نے وضاحتی بیان میں خاتون کے الزام کو سفید جھوٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ سابق نائب صدر نے اپنی تمام زندگی خواتین پر مظالم کے خلاف قانون سازی اور کلچر کو تبدیل کرنے کے لیے وقف کی ہے اور خواتین کے حقوق کے سب سے بڑے علمبردار ہیں۔
واضح رہے کہ امریکی صدارتی امیدوار جوبائیڈن پر جنسی الزام اس وقت سامنے آیا ہے جب وہ ڈیموکریٹس کی جانب سے ٹرمپ کے خلاف صدارتی امیدوار کے لیے مضبوط امیدوار بن کر ابھرے ہیں۔ جوبائیڈن بارک اوباما کے دور میں ملک کے ناب صدر بھی تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں